گوادر ایکسپو2018

  •   0
  •   Afi Sindhu
  •   0
  •   250
گوادر ایکسپو 29 جنوری سے 30 جنوری تک ہوگی 2 دن کے لیے اس نمائش کو منقد کیا جائے گا یہ پاکستان کے لیے بہت اہم نمائش ہے

فیز ون کا افتتاح: (Phase One inauguration)

گوادر ایکسپو 29 جنوری سے 30 جنوری تک جاری رہے گی. 2 دن کے لیے اس نمائش کو منعقد کیا گیا. یہ پاکستان کے لیے بہت اہم نمائش تھی. مجموعی طور پر 200 کمپنیوں نے اس میں حصہ لیا. جس میں 10 ہزار وزیٹر نے اپلائی کیا تھا حصہ لینے کے لیے لیکن صرف اور صرف پانچ ہزار وزیٹرز کو منظور کیا گیا ہے ابھی پہلی نمائش کو 5 ہزار وزیٹرز تک رکھا گیا ہے اسی نمائش میں گوادر فیز ون کا افتتاح (inauguratio )کر دیاگیا. نمائش سے پہلے ہی 30 کمپنیوں نے اپلائی کر دیا تھا جو کہ ایک بیلین کی سرمایہ کاری بنتی ہے اس نمائش میں مختلف کمپنیوں اور پاکستان کے درمیان ایگریمنٹ طے ہو ئے. ایکسپو کا مقصد گوادر بندرگاہ اور اس کے فری زون کو ابھرتے ہوئے کاروباری مرکز کے طور پر اہم کردار ادا کرنا ہے. اس ایکسپو کو منعقد کرنے کا بنیادی مقصد گوادر کی اہمیت ،گوادر پورٹ کو اور گوادر فری زون کو ابھرتے ہوئے کاروبار کے مرکز کے طور پر فروغ دینا ہے.

Gawder expo

CPEC منصوبے:(CPEC Project)

وزیراعظم پاکستان شاہد خان عباسی نے آزاد تجارتی زون (free zone) کا افتتاح کیا اور گوادر Expo18 کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور چین کی اقتصادی سرگرمیوں کو فروغ دینا ہے اور کہا کہ CPEC منصوبے چین اور پاکستان کے درمیان ہمیشہ کی دوستی کا ثبوت ہیں. گوادر فری زون کی افتتاحی تقریب پر گوادر ضلعی حکومت اور چین Overseas Ports Holding کمپنی کے درمیان گوادر کی غربت کے خاتمے کے لیے پروجیکٹ بنانے کا معاہدہ کیا۔ گوادر Expo 18 میں چین اور پاکستان دونوں کی سخت محنت دیکھی جا سکتی ہے.

shahid khan

گوادر فری زون:(Gwadar free zone)

دنیا بھر میں سفارتی کمیونٹی اور تاجروں کے ساتھ ساتھ غیر ملکی شخصیتیں دو روزہ تقریب میں شرکت کریں گی۔ وزیر اعظم احسن اقبال کے مطابق گوادر لاہور سے زیادہ آمدنی پیدا کرے گا گوادر اگلے ایک دہائی میں 40 ارب ڈالر کا بڑا کاروباری آمدنی پیدا کرنے والا شہر بنے گا۔ پاکستان کی تاریخ میں سب سے بڑا تجرباتی Expo گوادر میں ہے . اس طرح کے تمام دلچسپی والے افراد گوادر ایکسپو میں شامل ہوئے. وزیراعلی پاکستان شاہد خاقان عباسی نے گوادر فری زون کا پہلا مرحلہ پاکستان کا افتتاح کیا CPO چین نے 5 معاہدے کیے اور گوادر اور چین کی پورٹ کے درمیان تعاون کو مضبوط بنانے کا اعلان کیا گیا زیر تعمیر گوادر ہوائی اڈے گوادر ایسٹ بی ایکسپریس وے اور علاقے میں بہت سی مزید سماجی اقتصادی سرگرمیوں کو بھی بتایا گیا۔

Gawder

گوادر معاہدے:(Gwadar Agreement)

گوادر ایکسپو 18 COPHCاور CPEC گوادر کونسل میں درآمد اور برآمد کے لئے 35 چینی کمپنیوں نے حصہ لیا. PSO، GITL اور گوادر کے درمیان قریبی تعاون کے لئے ایک اور معاہدے پر دستخط کیا گیا تھا.گوادر اور ہٹا (Hatta) تجارتی شہر کے درمیان بھی ایک اور معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے۔ گوادر expo18 پاکستان کی سب سے بڑی expo ہے جس میں بہت سے کاروباری ادارے شامل تھے۔ گوادر میں کارساز کارخانہ بھی لگنے جا رہا ہیں. پلاسٹک انڈسٹریز شامل ہو رہی ہے. تقریبا 3 پلاسٹک کی انڈسٹریز شروع بھی ہو چکی ہیں. گودار میں میگا آئل سٹی بھی بنائی جائے گی. جس کا رقبہ 80،000 ایکڑ پر مشتمل ہوگا اس کو بنانے کا مقصد یہ ہے کہ اس میں عرب ممالک سے آنے والا آئل محفوظ کیا جائے گا اور اس کو پھر چین کی طرف بھیجا جائے گا چین کو آئل لانے کے لیے جو 40 دن کا سفر طے کرنا پڑتا تھا وہ 7 دن کا رہ جائے گا.

Gawder

اس بلاگ کے بارے میں اپنی رائے نیچے ضرور دیں.

0 Reviews
Blogs, Vlogs iGreen Bottom Image