کوریا (Korea)میں رہنے والے غیرملکی اور پاکستانیوں کی تعداد

کورین پہلے مزدوری کے لیے دوسرے ممالک جاتے تھے اور اب دوسرے ممالک کے لوگ مزدوری کے لئے کوریا جاتے ہیں. ..

کورین 1960 سے 1980 تک پوری دنیا میں مزدوری کیلئے جاتے رہے ہیں۔ پھر 1980 میں کوریا نے ترقی کرنا شروع کی جسے 'ہان دریا کامعجزہ' (Miracle of Han River) کہا جاتا ہے۔ 1980 کے بعد غریب ملکوں کے مزدوروں نے کوریا کا رُخ کرلیا۔ اس کو دیکھتے ہوئے کوریانے 1993 میں غیرملکی مزدوروں کیلے لیبر قانون متعارف کروایا۔ جس میں انہیں ٹرینی ( Trainee ) کا درجہ دیا گیا۔ اس قانون کے تحتغیرملکی ورکر کو مستقل ملازم کے حقوق میسر نہیں تھے۔ اور انہیں کوئی قانونی حق حاصل نہیں تھا۔ پھر 1995 میں ٹرینی کو کچھ حقوق دئیےگئے اور اگست 2003 میں ٹرینی مزدور کو مکمل ملازم کا درجہ دے دیا گیا اور ساتھ ٹرینی ویزہ کا کوٹہ بڑھا دیا گیا۔ مزید 2013 میں یہ کوٹہ بڑھا کر سالانہ 62000 کردیا گیا۔
Waiting For Interview in Korea
کوریا میں نومبر 2017 تک تقریباً 22 لاکھ کے قریب غیر ملکی مقیم ہیں جوکہ کل آبادی کا 3.4 فیصد ہے۔ کوریا میں مقیم غیرملکیوں میں زیادہ تعداد ان چینی باشندوں کی ہیں جن کے آباؤاجداد کورین تھے۔ اور 1910 میں جاپان کے قبضے , جنگ عظیم دوئم اور 50 کی دہائی کی کوریا جنگ میں چین ہجرت کرگئے تھے۔ ان کورین کو "چُوسن چُک (조선족) کہا جاتا ہے۔ ان میں سے 230000 غیر قانونی ( الیگل ) اس کے علاوہ ہیں۔کوریا میں مقیم غیرملکیوں میں زیادہ تر یہ ہیں۔
People From Other Countries in Korea
چین 898454, امریکہ 136663, ویت نام 129973, تھائی لینڈ 94314, فلپائن 53538, جاپان 49152, انڈونیشیا 46945, ازبکستان43852, کمبوڈیا 38395, تائیوان 31200, نیپال 26790, سری لنکا 26057, منگولیا 24561, کینیڈا 24353, برما 15921, بنگلہ دیش14644, روس 14425, آسٹریلیا 12468, پاکستان 11700, ہانگ کانگ 10762, بھارت 10196, برطانیہ 7398, متفرق ممالک 81600۔

Wedding man and women to other countries

کوریا دنیا کے ان ملکوں میں سے ایک ہے جہاں شرح پیدائش کم ہونے کی وجہ سے آبادی گھٹ رہی ہے۔ اس خامی کو پورا کرنے کیلے حکومت نے غیرملکیوں سے شادی کا قانون نرم کیا۔ حتی کہ کورین حکومت نے چند مخصوص ملکوں کے ساتھ شادی کے معاہدے بھی کئے۔ جس سےلاکھوں کورین نے جنوبی اور جنوب مشرقی ایشیائی ملکوں کے شہریوں سے شادیاں کیں۔ کوریا میں 1990 کے بعد سے غیرملکی شادیوں کاتناسب بڑھتا جارہا ہے۔ جو کہ 2005 میں 42000 شادیوں تک پہنچ چکا تھا۔ 2010 تک تقریباً 338785 غیرملکی شادیاں ہوچکی ہیں۔ جس میں246500 کورین مردوں نے غیر ملکی عورتوں اور 92285 کورین عورتوں نے غیرملکی مردوں سے شادیاں کی ہیں۔ اب کوریا میں ہونے والی شادیوں میں سے 10 فیصد شادیاں غیرملکیوں سے ہوتی ہیں۔ جبکہ ان شادیوں میں سے پانچ سال کے اندر اندر 40 فیصد طلاق ہوجاتی ہیں۔ ان جوڑوں سے پیدا ہونے والے کورین بچوں کی تعداد تقریباً 2 لاکھ ہے۔ ان بچوں کو "کوشیان یا اونوریان" (코시안 , 온누리안) پکارا جارہاہے۔

تحقیق و تحریر۔ محمد عبدہ

0 Reviews
Blogs, Vlogs iGreen Bottom Image