پاکستان پہ موجودہ قرضے

  •   0
  •   Afi Sindhu
  •   0
  •   320
پاکستان کو یوں تو 60 کی دہائی میں ہی قرضوں نے جکڑ لیا تھا. لیکن آج 2018 کے آتے آتے پاکستانی قوم پر قرضوں کا بوجھ ناقابل برداشت ہو چکا ہے.

پاکستان کو یوں تو 60 کی دہائی میں ہی قرضوں نے جکڑ لیا تھا. لیکن آج 2018 کے آتے آتے پاکستانی قوم پر قرضوں کا بوجھ ناقابل برداشت ہو چکا ہے. اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق پاکستان کے ذمے غیر ملکی قرضہ 79.4 ارب ڈالر ہیں. جبکہ مقامی بینکوں سے لیا جانے والا قرضہ 16 کھرب روپے سے تجاوز کر چکا ہے. یوں مجموعی طور پر ملکی اور غیر ملکی قرضہ 23 ہزار 4 سو 34 ارب روپے سے زیادہ ہے. اس قرضے کی ذمےدار صرف موجودہ حکومت نہیں ہے .

بلکہ گزشتہ حکومتوں نے بھی عوام پر قرضوں کا بوجھ بڑھانے میں اپنا حصہ شامل کیا ہے. اس سب کا نتیجہ یہ نکلا ہے کہ آج پاکستان کا ہر شہری مرد، عورت، جوان، بوڑھا، بچہ تقریباَ 1 لاکھ 19 ہزار روپے کا مقروض ہے. اگر اس خسارے میں گردشی قرضہ، ایف بی آر کے واجبات اور دیگر سرکاری ادروں کے قرضہ جات بھی شامل کر لیے جائیں. تو مالیاتی خسارہ 2 ہزار 5 سو 75 ارب روپے تک جا پہنچتا ہے. ان 4 سالوں میں 60 فیصد قرضہ لیا گیا ہے. اور باقی کا 40 فیصد ان 65 سالوں میں لیا گیا ہے. اور ان قرضوں کو بچوں کی تعلیم یا بہتری پہ خرچ نہیں کیا گیا بلکہ روڈ، بلڈنگز، اور موٹر ویز پہ خرچ کیا گیا ہے.

pic

اس بلاگ کے بارے میں اپنی رائے کمینٹ سیکشن میں ضرور دیجئے گا.

0 Reviews
Blogs, Vlogs iGreen Bottom Image