سرکاری ملازمین کی ذمہ داری

  •   0
  •   Afi Sindhu
  •   0
  •   258
اگر کوئی ملازم ایک محکمہ چھوڑ کر کسی دوسرے محکمے میں شامل ہو جائے. اور بعد میں واپس آکر اپنے پہلے محکمے میں شامل ہو سکتا ہے.

اگر کوئی ملازم ایک محکمہ چھوڑ کر کسی دوسرے محکمے میں شامل ہو جائے. وہ بعد میں واپس آکر اپنے پہلے محکمے میں شامل ہو سکتا ہے. سرکاری ملازم کا یہ حق کوئی اتھارٹی ختم نہیں کر سکتی. کسی بھی ملازم کو بغیر کسی وجہ سے نوکری سے نہیں نکالا جا سکتا.

سرکاری ملازمین کی طرح نجی ملازمین کے حقوق کے تحفظ کے لیے عدالتیں قائم ہیں. جن میں لیبر کورٹ اور نیشنل انڈسٹریل ریلیشن کمیشن قائم ہو کسی بھی ملازم کو صرف شوکاز کی بنیاد پر نوکری سے نہیں نکالا جا سکتا. کوئی بھی بڑی سزا دینے سے پہلے باقاعدہ انکوائری کا ہونا ضروری ہے.

سرکاری ملازم اپنے حقوق کی خلاف ورزی کی صورت میں محکمانہ اپیل کرنے کے بعد سروس ٹربیونل سے رجوع کر سکتا ہے. جبکہ پرائویٹ ملازم ادارے کو گریونس نوٹس بھیجنے کے پندرہ دن بعد لیبر کورٹ یا نشینل انڈسٹریل ریلیشن کمیشن سے رجوع کر سکتا ہے. تمام ملازمین 8 گھنٹہ سے زائد ڈیوٹی کرنے کے پابند نہیں ہیں.

اس بلاگ کے بارے میں اپنی رائے کمینٹ سیکشن میں ضرور دیجئے گا.

0 Reviews
Blogs, Vlogs iGreen Bottom Image